Hajj 9

حج مقامات میں بغیر اجازت کے داخل ہونے والے سیکڑوں افراد گرفتار

حج کے دوران بلا اجازت مقدس مقامات میں داخل ہونے پر سیکڑوں افراد گرفتار کر لیے گئے۔تفصیلات کے مطابق سعودی حکام نے حج کے دوران ضابطہ اخلاق کی خلاف ورزی پر سیکڑوں افراد کو گرفتار کیا ہے۔سیکیورٹی حکام نے بلااجازت مقدس مقامات میں داخل ہونے کی کوشش میں 936 افراد کو گرفتار کرنے کی تصدیق کی ہے۔
حکام کا کہنا ہے کہ سیکیورٹی حکام نے ان تمام افراد کے خلاف فوری ایکشن لیا ہے جب کہ ان افراد پر جرمانے بھی عائد کیے جائیں گے۔سعودی حکام نے کہا ہے کہ بغیر اجازت کے مقدس مقامات پر داخل ہونے والوں کو دس ہزار ریال جرمانہ ہو گا جب کہ دوبارہ خلاف ورزی پر جرمانہ ڈبل کر دیا جائے گا۔ سعودی عرب کی وزارت داخلہ کے ترجمان نے کہا ہے کہ حج موسم کے دوران منیٰ، مزدلفہ اور عرفات کے اطراف سیکورٹی حصار قائم ہے۔
جو موسم کے اختتام تک جاری رہے گا، کسی کو بھی غیر قانونی طریقے سے ان مقامات میں جانے نہیں دیا جائے گا۔عاجل ویب سائٹ کے مطابق وزارت داخلہ کے ترجمان نے حج کی تازہ صورتحال پر بریف کرتے ہوئے کہا کہ نئے کورونا وائرس سے بچاؤ کے لیے مقررہ حفاظتی تدابیر کی پابندی سب پر لازم ہے، کوئی بھی اس سے مستثنیٰ نہیں۔ ترجمان نے کہا کہ سیکورٹی فورس کے ادارے ایسے کسی بھی شخص کو جس کے پاس حج کا اجازت نامہ نہیں ہوگا اسے مقدس مقامات میں داخل ہونے سے روکیں گے۔
ان کا کہنا تھا کہ سیکورٹی فورسز نے بغیر اجازت غیر قانونی طریقے سے حج مقامات میں داخلے کی کوشش کرنے والے سیکڑوں فراد کو گرفتار کیا ہے۔ ترجمان سیکورٹی فورسز نے شہریوں اور مقیم غیر ملکیوں پر زورد یا ہے کہ وہ بغیر اجازت نامے کے حج مقامات میں داخل ہونے کی کوشش سے گریز کریں۔ وازارت داخلہ کی جانب سے گزشتہ ماہ سے لوگوں کو خبردار کیا جا رہا ہے کہ پرمٹ کے بغیر مشاعر مقدسہ جانے پر دس ہزار ریال جرمانہ عائد کیا جائے گا۔حج مقامات میں داخلے پر پابندی کا نفاذ گزشہ ماہ ذوالقعدہ کی 28 تاریخ سے کیا گیا تھا جو 12 ذوالحج تک جاری رہے گی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں