Tik Tak 100

لاہور میں ٹک ٹاک پر دوست بننے والے لڑکے نے ساتھیوں کیساتھ مل کر نوجوان لڑکی کو مبینہ اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا

لاہور میں ٹک ٹاک پر دوست بننے والے لڑکے نے ساتھیوں کیساتھ مل کر نوجوان لڑکی کو اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا، متاثرہ لڑکی نے مقدمہ کے اندراج کے لیے تھانہ ملت پارک میں درخواست دے دی، میڈیکل کرانے کے بعد قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ تفصیلات کے مطابق پنجاب کے دارالحکومت لاہور میں ایک نوجوان لڑکی کو ٹک ٹاک پر ایک لڑکے سے دوستی کرنے کا بھیانک انجام دیکھنا پڑ گیا۔
بتایا گیا ہے کہ لاہور کے علاقے ملت پارک سے تعلق رکھنے والی لڑکی کو اس کے ٹاک ٹاک دوست نے ساتھیوں کیساتھ مل کر مبینہ زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا۔ متاثرہ لڑکی نے پولیس میں شکایت درج کروا دی ہے۔ متاثرہ لڑکی نے پولیس کو دئیے گئے بیان میں بتایا ہے کہ اس نے 20 دن قبل مشہور موبائل ایپ ٹاک ٹاک پر لاہور سے ہی تعلق رکھنے والے شیراز نامی لڑکے سے دوستی کی تھی۔
بعد ازاں ٹک ٹاک پر دوست بننے والے لڑکے نے اسے ملاقات کیلئے بلایا۔ شیراز کے بلانے پر وہ لاہور کے علاقے سمن آباد پہنچی تو اسے گاڑی میں بٹھا لیا گیا۔ گاڑی میں شیراز کے 2 دوست بھی سوار تھے۔ بعد ازاں شیراز اور اس کے دوستوں نے مل کر اسے گن پوائنٹ پر اجتماعئ زیادتی کا نشانہ بنایا ڈالا۔ متاثرہ لڑکی نے شیراز اور اس کے دوستوں کیخلاف باقاعدہ مقدمے کے اندارج کی درخواست بھی دی ہے۔
اس تمام معاملے کے حوالے سے پولیس کا کہنا ہے کہ متاثرہ لڑکی کی درخواست کے بعد تحقیقات کی جا رہی ہے۔ متاثرہ لڑکی کا میڈیکل کروایا جائے گا، اور پھر رپورٹ کی روشنی میں قانون کے مطابق کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔ لڑکی کی درخواست کے بعد سے فی الحال کوئی گرفتاری عمل میں نہیں لائی گئی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں