5

بھارتیوں نے معروف اداکارہ دپیکا پڈوکون کو غدار قراردےدیا

جوہرا لال نہرو یونیورسٹی میں بھارتی حکومت کیخلاف ہونیوا لے احتجاج میں شرکت کرنے پر بھارتیوں نے اداکارہ دپیکا پڈوکون کو غدار قراردیدیا ۔ تفصیل کے مطابق بھارت کی معروف اداکارہ دیپکا پڈوکون بھارتی حکومت کے خلاف کھل کر سامنے گئیں ہیں۔ جواہر لال نہرو یونیورسٹی میں ادکارہ دیپکا پڈوکون کی شرکت پر بی جے پی آگ بگولہ وہ گئی۔
جبکہ آر ایس ایس کے کارکن تلملا اٹھے۔ جس کے بعد دپیکا پڈوکون نے جوہرالال یونیورسٹی میں شرکت کرکے بھارتی اداکارہ ہندو توا کیخلاف کھل کر سامنے آگئیں ہیں۔ جس کے بعد سوشل میڈیا پر بھارتی اداکارہ کیخلاف مہم شروع کردی گئی ہے۔ سوشل میڈیا صارفین نے بھی حق و سچ کا ساتھ دینے پر بھارتی اداکارہ کو خوب تنقید کا نشانہ بنایا۔
جس کے بعد بائیکاٹ دیپیکار ٹویٹر پر ٹرینڈ میں رہا ۔
ساتھ ہی ساتھ عوام کی جانب سے دپیکا پڈوکون کو سوشل میڈیا پر بلاک کئے جانے کی ویڈیو و تصاویر بھی سامنے آتی رہیں۔
ہندو توا کا نظریہ رکھنے والے کچھ بھارتیوں نے بھارتی اداکارہ کو غدار قرار دینے کے ساتھ ساتھ ان کی تمام تر فلموں بائیکاٹ کا اعلان کرنے ہوئے بک کی گئی فلم کی ٹکٹس کو بھی کنسل کردیا۔ نقل اثاث دبي
واضح رہے بھارتی متنازعہ شہریت کیخلاف پورے بھارت میں احتجاج جاری ہیں اس کے ساتھ ساتھ جوہرا لال نہرو یونیورسٹی کے طالب علم بھی احتجاج کر رہے ہیں۔ جس میں بھارتی اداکارہ دیپیکا پڈوکون سمیت کئی لوگوں نے شرکت کی تھی۔ تاہم بھارتیوں کی جانب سے اداکاہ کیخلاف مہم چلا دی گئی اور غدار قرار دےدیا گیا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں