33

نواز شریف آٹھ ہفتے سے پہلے واپس آ جائیں گے

اسلام آباد (19 نومبر 2019ء) : سابق وزیراعظم نواز شریف کی بیرون ملک روانگی اور وطن واپسی سے متعلق بات کرتے ہوئے پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئیر رہنما اعتزاز احسن نے کہا کہ شریف خاندان کی جانب سے جو حلف نامہ جمع کروایا گیا ہے اس کی کوئی اہمیت نہیں ہے۔ انہوں نے کہاکہ میں آپ کو عرض کر رہا ہوں کہ میرے خیال میں میاں نواز شریف آٹھ ہفتے سے پہلے واپس آجائیں گے۔
اعتزاز احسن کا کہنا تھا کہ نواز شریف آٹھ ہفتے سے پہلے آ کر انہیں سرپرائز دے دیں گے۔
واضح رہے کہ اب سے کچھ دیر قبل سابق وزیراعظم نواز شریف ائیر ایمبولینس کے ذریعے لاہور سے لندن روانہ ہو گئے ہیں۔سابق وزیراعظم نواز شریف کی طبیعت خرابی کے باعث انہیں ائیر ایمبولینس کے ذریعے لاہور سے لندن لے جایا جا رہا ہے۔
امیگریشن ذرائع کے مطابق نواز شریف کو صرف ایک بار بیرون ملک جانے کی اجازت ملی ہے اور وہ اس دفعہ صرف عدالت کے احکامات دیکھا کر ملک سے باہر جا سکیں گے تاہم ان کا نام ای سی ایل میں رہے گا۔ اب سے کچھ دیر قبل سابق وزیراعظم نواز شریف ائیر ایمبولینس میں سوار ہو کر لندن روانہ ہو گئے ہیں۔ ایئرایمبولینس میں دو ڈاکٹرز، دوپیرامیڈیکل اسٹاف اور طبی امداد کی سہولیات موجود ہیں۔
سابق وزیر اعظم نواز شریف کے ہمراہ پانچ لوگ ائیر ایمبولینس میں روانہ ہوں گے جن میں شہباز شریف، ڈاکٹر عدنان، عابد اللہ جان اور محمد عرفان شامل ہیں۔ سابق وزیراعظم نواز شریف کے ذاتی معالج ڈاکٹر عدنان نے ٹویٹر پیغام میں بتایا کہ نواز شریف دوحہ کے راستے برطانیہ جائیں گے، ایئر بس اے 319-133LR A7MED کے ذریعے سابق وزیراعظم کی روانگی ہوگی، نواز شریف شام ساڑھے چھ بجے لندن ہیتھرو ایئر پورٹ پر پہنچیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں