72

عوام کو نئے سال کا تحفہ، آٹے کی قیمت میں حیران کن اضافہ

آٹے کی قیمت میں حیران کن طور پر 4 روپے کا اضافہ کر دیا گیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق نئے سال کے آغار میں ہی آٹا بنانے والی کمپمنیوں کی جانب سے کھلے آٹے کی قیمت میں 4 روپے فی کلو اضافہ کر دیا گیا ہے۔ ملک میں بڑھتی ہوئی مہنگائی کو مدنظر رکھتے ہوئے آٹا بنانے والی فیکٹریوں کے مالکان کی ایسوسی ایشن نے بھی عوام پر پہاڑ توڑنے کا فیصلہ کر لیا، آٹے کی قیمت میں اضافہ کر کے اس کی قیمت کو بڑھا دیا ۔
تازہ ترین تفصیلات کے مطابق عوام کو آٹا 60 کی بجائے 64 روپے میں ملے گااور 100 کلو کے آٹے کا تھیلا 2400 کی بجائے 2560 روپے میں ملا کرے گا۔ پاکستان میں ہر روز بڑھتی ہوئی مہنگائی کو مدنظر رکھتے ہوئے اس رفتار سے روزمرہ کی کھانے پینے کی اشیاء کی قیمتوں میں اضافے نے عوام کی کمر توڑ دی ہے۔
یاد رہےیوٹیلیٹی سٹورز نے بھی قیمتوں میں اضافے کا اعلان کرتے ہوئے کھانے پینے کی اشیاء کو عوام کی پہنچ سے اور دورکر دیا ہے۔

عوام کی جانب سے اس بڑھتی ہوئی مہنگائی کو کنٹرول کرنے کی فریاد بار بار کی جا چکی ہے لیکن ابھی تک اس پر کسی قسم کا کوئی عمل سامنے نہیں آیا۔ لوگوں کا کہنا ہے کہ اگر آٹے جیسی چیزیں بھی ہماری پہنچ سے دور ہو جائیں گی تو ہمارے لئے اس مہنگائی میں زندگی گزارنا مشکل ہو جائے گا۔ لوگوں کا مزید کہنا تھا کہ مختلف مقامات پر حکومت پاکستان اور عمران خان سے التجا کر چکے ہیں، مگر مہنگائی کا پہاڑ ہم پر ٹوٹتا چلا جا رہا ہے۔
واضح رہے کہ حکومت کی جانب سے ابھی تک آٹے کی قیمت میں اضافے پر ابھی تک کسی قسم کا کوئی رد عمل سامنے نہیں آیا نہ ہی کسی قسم کا کوئی ایکشن لینے کا حکم جاری کیا گیا ہے۔ حکومت کی جانب سے اس طرح کی مختلف نشستوں کا اہتمام بار بار کیا جا چکا ہے جس میں بڑھتی ہوئی مہنگائی کو روکنے کے لئے اقدامات کرنے کی منصوبہ بندی کی گئی ہے، لیکن ابھی تک ان نشستوں کا کوئی نتیجہ عوام کو نہیں ملا، عوام آج بھی مہنگائی کے دلدل میں جھلستی جا رہی ہے ، انہیں ریلیف نہیں مل رہا۔ واضح رہے کہ آٹے کی قیمت میں آج حیران کن طور پر 4 روپے فی کلو کا اضافہ کر دیا گیا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں