18

مرکزی رویت ہلال کمیٹی کی جانب سے امسال صدقہ فطر کی ادائیگی پر نصاب جاری کردیاگیا

مرکزی رویت ہلال کمیٹی کی جانب سے امسال صدقہ فطر کی ادائیگی پر نصاب جاری کردیاگیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق مفتی منیب الرحمٰن کا کہنا ہے کہ صدقہ فطر اور فدیے کی کم سے کم مقدار 100 روپے فی کس ہے۔ جبکہ اہل ثروت اپنی مالی حیثیت دیکھتے ہوئے فطرہ وفدیہ ادا کریں۔ چکی کے آٹے کے حساب سے صدقہ فطر 125 روپے، 30 روزوں کا فدیہ 3 ہزار 750 روپے،جان بوجھ کر روزہ توڑنے پر 60 مساکین کو کھانا کھلانا لازمی ہوگا جس پر کفارہ صوم ساڑھے سات ہزار روپے مقرر کیا گیا ہے ۔
جَو کے لحاظ سے صدقہ فطر 320 روپے، 30 روزوں کا فدیہ 9 ہزار 600 روپے ، جبکہ روزہ توڑنے کی صورت میں 19 ہزار 2 سو روپے اد کرنا ہونگے۔ کجھور کے حساب سے صدقہ فطر 1600 روپے، 30 روزوں کا فدیہ 48 ہزار روپے ، جبکہ روزہ توڑنے کی صورت میں 96 ہزار روپے کفارہ صوم مقرر کیا گیا ہے۔
کشمش کے لحاظ سے صدقہ فطر 1920، 30 روزوں کا فدیہ 57 ہزار 600 روپے جبکہ کفارہ صوم ایک لاکھ 15 ہزار دو سو روپے مقرر کیا گیا۔

پنیر کے حساب سے صدقہ فطر 3 ہزار 540 ، روزوں کا فدیہ ایک لاکھ چھ ہزار جبکہ کفارہ صوم 2 لاکھ 12 ہزار 400 روپے مقرر کیا گیا۔ رویت ہلال کمیٹی کی جانب سے کہا گیا ہے کہ جار ی کردہ نصاب میں کم سے کم قیمت رکھی گئی ہے۔ تاہم جن لوگوں کو اللہ تعالیٰ نے اپنے خزانے سے کشادہ رزق عطا کیا ہے وہ بڑھ چڑھ کہ حصہ لے سکتے ہیں رویت ہلال کمیٹی کے مطابق اس سال زکوۃ کا نصاب 46 ہزار329 روپے ہوگا۔
واضح رہے اسے قبل جامعہ نعیمیہ نے امسال صدقہ فطر کی ادائیگی پر نصاب جاری کیا تھا ، جس کے تحت امسال فدیہ یوم اور صدقہ فطر فی کس 100روپے ادا کیا جائے گا، منتظمم ڈاکٹر راغب نعیمی نے کہا کہ صدقہ فطر رمضان المبارک سے قبل بھی ادا کردیا جائے تو جائز ہے۔ دارالعلوم جامعہ نعیمیہ کے ناظم اعلیٰ وممبراسلامی نظریاتی کونسل ڈاکٹر محمد راغب حسین نعیمی نے خطبہ جمعہ میں کہا کہ جامعہ نعیمیہ نے امسال صدقہ فطر کی ادائیگی پر نصاب جاری کردیا ہے۔ صدقہ فطر گندم کے حساب سے 100روپے، جو کے حساب سے 200 روپے فی کس ہوگا۔

اپنا تبصرہ بھیجیں