8

ایک ڈالر بھی تبدیل کرانے کیلئے شناختی کارڈ لازم قراردے دیا گیا

ایک ڈالر بھی تبدیل کرانے کیلئے شناختی کارڈ کی شرط لازم قرار دیدی گئی۔ تفصیل کے مطابق سٹیٹ بنک آف پاکستان کی جانب سے جاری کی گئی ہدایت کے مطابق اب ایک ڈالر بھی تبدیل کرانے کیلئے شناختی کارڈ جمع کرانا ہوگا۔ جس کے بعد پاکستان شہریوں سمیت دیگر اوورسیز پاکستانی کیلئے یہ پریشانی کا باعث بن گیا ہے۔
اووسیز پاکستانیو نے تحفظات کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ کیا شناختی کارڈ کی شرط لاگوں ہونے سے اٹھارہ سال سے کم عمر کے بچے کرنسی کو تبدیل نہیں کراسکے گئے؟ جو پریشانی کا باعث ہے۔ واضح بہت سے پاکستان بیرون ملک سے پاکستان کو زرمبالہ کے بڑھے زخائر فراہم کررہے ہیں۔ واضح رہے اس سے قبل بھی 500 ڈالر تبدیل کرانے پر شناختی کارڈ کی شرط لازم رکھی گئی تھی ۔
واضح رہے اس سے قبل 50 ہزار کی خریداری پر بھی شناختی کارڈ کی شرط لازم قرار دی تھی، تاہم تاجربرادی کے احتجاج کے بعد اس کو موخر کردیا گیا تھا ۔ 50 ہزار کی خریداری پر شناختی کارڈ کا معاملہ وزیراعظم عمران خان تک جا پہنچا تھا ۔ فیڈرل بورڈ آف ریونیو ایف بی آر نے بتایا تھا کہ پچاس ہزار کی خریداری پر شناختی کارڈ کی شرط لاگو ہوگی یا نہیں اس حوالے سے حتمی فیصلہ وزیراعظم عمران خان کریں گے۔
مزید بتایا گیا تھا کہ 32 لاکھ پرچون فروش ایف بی آر کی شرط کو تسلیم کرنے پر تیار نہیں۔ دو روز قبل ایف بی آر فنانس ایکٹ 2019ء میں ٹیکس قوانین میں ترامیم کی تفصیلات جاری کی تھیں۔ موصول ہونے والی اطلاعات کے مطابق ایف بی آر کی جانب سے 50 ہزار روپے مالیت سے زائد کا سامان خریدنے پر شناختی کارڈ کی شرط لاگو کردی جائے گی ۔ تاہم تاجر برادری کے بھرپور احتجاج کے بعد حکومت نے شناختی کارڈ کی شرط موخر کردی تھی۔

اپنا تبصرہ بھیجیں