15

چین میں ویکیسن کی تیاری،قدرت نے پاکستان کو کورونا پر قابو پانے کا موقع فراہم کر دیا

گذشتہ روز چین نے کورونا کی ویکسین تیار کرنے کا دعویٰ کیا،، ڈائریکٹر نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ جنرل عامر اکرام نے نجی ٹی وی چینل کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے تصدیق کی ہے کہ چین سے کلینکل ٹرائلز کیلئے بہت جلد ویکسین پاکستان پہنچا دی جائے گی۔اسی حوالے سے معروف معالج پروفیسر ڈاکٹر اشرف ضیا کا کہنا ہے کہ چین نے کورونا ویکسین تیار کرنے اور پاکستان کو دینے کا اعلان کیا ہے۔
یہ انتہائی خوش آئند بات ہے۔اب دیکھنا یہ ہوگا کہ یہ کب تک پاکستان پہنچتی ہے اور کتنی مقدار میں پہنچتی ہے۔اگر مئی کے پہلے ہفتے یہ ویکسین پاکستان کو ملتی ہے تو مئی کے درمیان میں جو کورونا بڑھنے کا خدشہ ہے اس پر ہم قابو پا لیں گے۔ویکسین ملتے ہی حکومت کو اس کو تیزی سے پورے پاکستان میں پھیلانا ہوگا۔
اس کام کے لیے حکومت لیڈی ہیلتھ ورکرز کا استعمال بھی کر سکتی ہے۔

جتنی جلدی یہ ویکسین لگانا شروع ہو جائے گی اتنی جلدی ہم کورونا کے عذاب سے سے باہر نکل جائیں گے۔واضح رہے کہ چینی دوا ساز کمپنی سینوفارم انٹرنیشنل کارپوریشن نے کورونا کی ویکسین تیار کر لی ہے اور اب کمپنی نے چینی حکومت کی مدد سے چین کے ساتھ ساتھ پاکستان میں بھی ویکسین کے ٹرائل کا اعلان کیا ہے۔ چینی کمپنی کی جانب سے بتایا گیا ہے کہ یہ ویکسین پاکستانی حکومت کے ساتھ مل کر پاکستان میں بھی استعمال کی جائے گی۔
ڈائریکٹر نیشنل انسٹی ٹیوٹ آف ہیلتھ جنرل عامر اکرام نے تصدیق کی ہے کہ پاکستان سب سے پہلے ویکسین حاصل کرنے والے ممالک میں شامل ہوگا۔ انہوں نے بتایا کہ بہت سے ممالک ویکسین کی تیاری میں لگے ہوئے ہیں اور چین نے بھی ایسے ہی کورونا کی ویسکین بنائی ہے جس کے کلینکل ٹرائل چین میں کیے جانے ہیں اور پاکستان میں بھی اس دوا کا استعمال کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ان کاموں میں کافی وقت لگتا ہے جیسا کہ آکسفورڈ یونیورسٹی نے بھی ستمبر سے کلینکل ٹرائلز کا فیصلہ کیا ہے البتہ اگلے تین ماہ کے اندر پاکستانی اچھی خبرسنیں گے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں